لیاقت بلوچ ایران روانہ

ل

اسلامی جمعیت طلبہ پاکستان کے سابق ناظم اعلیٰ اور جماعت اسلامی کے نایب امیرلیاقت بلوچ دو روزہ دورے پر لاہور سے ایران روانہ ہویے ہیں جہاں پر وہ ایرانی قیادت،جامعات کے وایس چانسلرز اور علماء کرام سے ملاقاتیں کرینگے۔یاد رہے کہ بغداد میں ایرانی پاسداران انقلاب کے میجر جنرل قاسم سلیمانی امریکی ڈرون حملے کا نشانہ بن کر زندگی کی جنگ ہار بیٹھے تھے ،لیاقت بلوچ ایرانی قیادت سے تعزیت اور اظہار یکجیتی بھی کرینگے۔

لیاقت بلوچ ملی یکجہتی کونسل پاکستان کے سیکریٹری جنرل بھی ہیں ان کے ہمراہ ملی یکجہتی کونسل کے دیگر رہنما بھی موجود ہیں جن میں علامہ عارف واحدی،پیر صفدر گیلانی،علامہ ثاقب اکبر،مولانا رضیعت اللہ ،طایر الرحیم اور علامہ مقصود سلفی شامل ہیں۔یاد رہے کہ ملی یکجہتی کونسل کا قیام ۱۹۹۰ میں سابق امیر جماعت اسلامی قاضی حسین احمد نےعمل میں لایا تھا اور ملی یکجہتی کونسل کے پلیٹ فارم میں تمام مکتبہ فکر کے علماء کرام کو شامل کیا جن کا بنیادی مقصد پاکستان سے فرقہ وارانہ فسادات کا خاتمہ اور قدر مشترک و درد مشترک پر قوم کو ایک پلیٹ فارم پر یکجا کرناتھا۔

قاضی حسین احمد کی رحلت کے بعد یہ زمہ داری لیاقت بلوچ نے اپنے کندھوں پر لی اور جناب قاضی حسین احمد کے نقش قدم پر چل کر اس پلیٹ فارم کو خوش اسلوبی سے چلایا حالیہ دورہ بھی اسی سلسلے کی ایک کڑی ہے جس میں برادر اسلامی ملک کو اپنے تعاون کا یقین دلانا اور مسلم امہ کے اتحاد کو یقینی بنانا۔ملی یکجہتی کونسل کی کاوشیں ثمر آور ثابت ہویی اور پورے پاکستان میں یکجہتی کونسل کی اتحاد امت کے لیے کی جانے والی کوششوں کو سراہا گیا۔

About the author

Haq Nawaz Malik

Add Comment

Haq Nawaz Malik

Get in Touch