لیاقت بلوچ کی وطن واپسی

ل

سابق ناظم اعلیٰ اسلامی جمعیت طلبہ و نایب امیر جماعت اسلامی پاکستان لیاقت بلوچ ایران کا سات روزہ دورہ مکمل کرکے پاکستان پہنچ گیے۔ایران میں لیاقت بلوچ نے وفد کے ہمراہ ایران کی اعلی قیادت،سکالرز اور اہم شخصیات سمیت جنرل قاسم سلیمانی کے اہل خانہ سے بھی ملاقات کی ۔جنرل سلیمانی کےخاندان سے ملاقات کے موقع پر ان کا کہنا تھا کہ پاکستانی قوم اور ملی یکجہتی کونسل امریکی جارحیت کی بھرپور مذمت کرتی ہے جنرل قاسم سلیمانی کے قتل کی امریکا کے مجرمانہ اقدام کی مذمت کرتے ہوئے کہا کہ ہم سب جنرل قاسم سلیمانی کی شہادت میں سوگوارہیں۔

نائب امیرجماعت اسلامی نے مرجع دینی آیت اللہ مکارم شیرازی سے خصوصی ملاقات میں امریکا کی مجرم حکومت کے ہاتھوں جنرل قاسم سلیمانی کے قتل کی جانب اشارہ کرتے ہوئے کہا کہ وہ عظیم جنرل اور بہت ہی محترم شخص تھے اور در حقیقت ہم سب کو ان کی شہادت کا گہرا صدمہ ہے اور ہم سب ان کے غم میں سوگوار ہیں۔

ملی یکجہتی کونسل کے سکریٹری جنرل کا کہنا تھا کہ وہ قوم جو مرجعیت اور عظیم مکتب فکر کی پروردہ ہو وہ کبھی بھی حق اور سچائی کے راستے سے پیچھے نہیں ہٹے گی اور مزاحمت کے راستے کو پوری طاقت کے ساتھ جاری رکھے گی۔ جماعت اسلامی کے نائب امیر لیاقت بلوچ کا کہنا تھا کہ آج امریکا امت مسلمہ پر حملہ آور ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ اگر اسلامی ممالک ایران کے ساتھ ہوتے اور تسلط کو قبول نہ کرتے تو حالات کچھ اور ہی ہوتے۔ ان کا کہنا تھا کہ ان ممالک کے حکام دوسروں کی خوشنودی حاصل کرنے اور اس فانی دنیا کی زندگی کے بارے میں ہی سوچتے رہتے ہیں۔

نائب امیر جماعت اسلامی پاکستان لیاقت بلوچ نے مرجع دینی آیت اللہ مکارم شیرازی سے ملاقات پر خوشی کا اظہار کرتے ہوئے ان کی تفسیرنمونہ کو بیش قیمتی اور اہم تفسیر قرآن قرار دیا۔ انہوں نے تاکید کی کہ اس تفسیر قرآن سے تمام شیعہ اور سنی استفادہ کرتے ہیں اور اس کی اہمیت کے قاتل ہیں۔ انہوں نے اسی طرح مرجع دینی کی جانب سے جاری ہونے والے فتوؤں کو بھی نہایت ہی اہم قرار دیا ۔

About the author

Haq Nawaz Malik

Add Comment

Haq Nawaz Malik

Get in Touch